سب طاقت کا کھیل ہے، 305

سب طاقت کا کھیل ہے، شاہ رُخ جتوئی کی رہائی پر فنکار ملک چھوڑنے کو طیار

سپریم کورٹ آف پاکستان نے شاہ زیب قتل کیس کے ملزم شاہ رخ جتوئی کو دیگر ملزمان سمیت بری کر دیا ہے۔

سپریم کورٹ کے اس فیصلے پر سوشل میڈیا صارفین سمیت شوبز شخصیات کی جانب سے بھی اپنے جذبات کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

اداکار ہارون رشید کا شاہ رُخ جتوئی کی رہائی پر کہنا ہے کہ سامان باندھنے اور ملک چھوڑنے کا وقت آگیا ہے، آپ میں سے جو نوجوان پڑھے لکھے اور پرعزم ہیں، برائے مہربانی اپنے بچوں کی خاطر اگر موقع ملے تو باہر نکل جائیں۔

 شاہ زیب قتل کیس کے ملزم شاہ رخ جتوئی

فلم ’مولا جٹ‘ کی ہیروئن مُکھو نے مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سب طاقت کا کھیل ہے۔

اسی طرح معروف رائٹر خلیل الرحمٰن قمر نے اس فیصلے پر ردِعمل دیتے ہوئے لکھا ہے کہ ایک دن تمہارا قتل ہؤا تھا شاہ زیب، آج انصاف کا خون ہو گیا۔

آئی ایس پی آر

اداکارہ ماورہ حسین نے شاہ زیب قتل کیس کے فیصلے پر دُکھ کا اظہار کرتے ہوئے اسے حیرت انگیز اور شرمناک قرار دیا ہے۔

یاد رہے کہ شاہ زیب خان کی ہلاکت کا واقعہ 24 دسمبر 2012ء کی شب کراچی کے علاقے ڈیفنس پیش آیا تھا، اس شب شاہ رخ جتوئی اور اس کے ساتھیوں نے تلخ کلامی کے بعد فائرنگ کر کے شاہ زیب کو قتل کر دیا تھا۔

شاہ زیب قتل کے مقدمے میں ٹرائل کورٹ کی جا نب سے شاہ رخ اور اِس کے ساتھی سراج تالپور کو سزائے موت جبکہ دیگر دو مجرموں سجاد تالپور اور غلام مرتضیٰ لاشاری کو عمر قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

بعد ازاں 2019ء میں سندھ ہائیکورٹ نے شاہ رخ جتوئی اور سراج تالپور کی جانب سے دائر کی گئی بریت کی اپیل مسترد کرتے ہوئے اِن کی سزائے موت کو عمر قید میں تبدیل کر دیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں